Eriobotrya japonica

لوکاٹ کے پتے اور پھل 32 امراض کیلئے باعث شفا پڑھیے

لوکاٹ کے پتے اور پھل 32 امراض کیلئے باعث شفا ہیں پڑھیے

لوکاٹ ترش اور شیریں ذائقہ پر مشتمل موسم گرما کا مزیدار پھل ہے

جسے انگلش Eriobotrya japonicaمیںکہا جاتا ہے۔لوکاٹ چین سے تعلق رکھتا ہے۔برصغیر پاک و ہند میں یہ پھل انگریزوں کے ساتھ آیا۔

جاپان اور بحیرہ روم کے علاقوں میں کثرت سے پیدا ہوتا ہے۔

پاکستان میں بیشتر علاقوں میں لوکاٹ کے باغات ہیں وادی سوات ‘کلر کہار’وادی سون’پوٹھوہار اپر اور وسطی پنجاب ان میں سے اہم ترین ہیں۔

تازہ پھل کے طور پر کھائے جانے کے علاوہ دنیا بھر میں لوکاٹ سے مختلف مشروبات’جام’ جیلی اور چٹنیاں وغیرہ بھی تیار کی جاتی ہیں۔

جبکہ اس کے پتے اور پھل کئی امراض کیلئے باعث شفا ہیں۔

کئی امراض کیلئے باعث شفا


لوکاٹ میں وٹامن اے’بی٦‘وٹامن سی‘فولیٹ’میگنیشیم’سیلینیم’سوڈیم’زنک’کاپر’اومیگا٣اوراومیگا٦فیٹی ایسڈزپائے جاتے ہیں۔

سوگرام لوکاٹ میں صرف سینتالیس کیلوریز پائی جاتی ہیں

اس وجہ سے وزن کم کرنے والے افراد کیلئے لوکاٹ انتہائی خوش ذائقہ تحفہ ہے جو فائبر(ریشہ) سے بھی بھرپور ہے۔

شوگر کے مریض اسے بلاجھجھک استعمال کر سکتے ہیں کیونکہ اس کی مٹھاس نقصان دہ نہیں۔

وٹامن اے کی موجودگی اسے بصری قوت اور دانتوں کی صحت کیلئے فائدہ مند بنا دیتی ہے۔

پیاس کی شدت اور متلی یا قے میں اس کا تازہ پھل یا شربت استعمال کرنے سے یقینی فائدہ ہوتا ہے۔

لوکاٹ مسکن حرارت ہونے کی وجہ سے خون کی حدت کو کم کرتے ہوئے موسم گرما کی بے چینی اور گھبراہٹ دورکرتا ہے۔

امراض قلب کے مریضوں میں دل کو فرحت اور سکون بخشتا ہے۔

نظام انہضام کیلئے لوکاٹ انتہائی مفید ہے۔

غذا کو جلد ہضم کرنے میں مدد دیتا ہے۔

بواسیر کی مرض میں لوکاٹ بے حد مفید ہے۔

لوکاٹ صفراوی اور دموی امراض میں معاون دوا کا کام کرتا ہے۔

مصفی خون ہونے کی وجہ سے گرمی دانوں میں موثر ہے۔
ہمارے ہاں لوکاٹ کے پتوں سے فائدہ نہیں اٹھایا جاتااور اسے ضائع کردیا جاتا ہے

جبکہ ان کی برآمد سے قیمتی زرمبادلہ حاصل کیا جا سکتا ہے۔

دنیا کے ترقی یافتہ ممالک میں لوکاٹ کے پتے فولاد’کاپر’کیلشیم’میگنیشیم اور دیگرمنرلز(معدنیات)کے حصول کا بہترین ذریعہ ہیں۔

لوکاٹ لیف سے تیارشدہ ہربل ٹی‘متلی ‘قے’ڈائریا’ڈیپریشن اور مختلف قسم کے اورام ختم کرنے میں فائدہ مند ثابت ہوئی ہے۔

امراض تنفس خصوصاًپھیپھڑوں کی بعض جدید امراض( سی اوپی ڈی’وغیرہ)میں لوکاٹ لیف ایکسٹریکٹ مفید ہے۔

لوکاٹ لیف اینٹی آکسیڈنٹ اور اینٹی ایجنگ صلاحیت رکھتے ہیں۔

جلد اور دیگر اقسام کے کینسر کے بچاؤ میں لوکاٹ کے پتے ایک ڈھال کا کام کرتے ہیں۔

لوکاٹ کے پتے انسانی جسم کے مدافعتی نظام کو طاقتور بناتے ہیں۔
چائینز گورنمنٹ لوکاٹ لیف کو اینٹی شوگرایجنٹ کے طور پر تسلیم کر چکی ہے

اور اس سے ہربل ادویات کی تیاری کی منظوری دے چکی ہے۔

لوکاٹ لبلبہ کو تقویت فراہم کرتا ہے

اس کے علاوہ انسانی جسم میںTormentic acidپیدا کرتا ہے جو انسولین کی پروڈکشن کرکے ذیابیطس کو کنٹرول کرنے کا باعث بنتا ہے۔

اس حوالے سے لوکاٹ کے پتے 7 عدد ایک کپ پانی میں جوش دے کرچائے بنائیں

اس ہربل ٹی کے ساتھ گٹھلی جامن کا 5 گرام سفوف صبح منہ نہار پھانک لیں چند دنوں میں شوگر کنٹرول ہو جائے گی۔

نشاستہ دار غذا ‘آلو’چاول’چینی وغیرہ سے پرہیز ضروری ہے۔


لوکاٹ لیف جلد کی سوزش اور ورم میں فائدہ مند ہے جبکہ اس میں اینٹی وائرل خاصیت بھی پائی جاتی ہے۔

اس لئے متعدد قسم کی وائرل انفیکشنز میں موثر ہے۔

لوکاٹ لیف میں2-alpha-hydoxyursolic acidکی موجودگی اسے ایچ آئی وی ایڈز وائرس کو کمزور کرنے کا باعث بناتی ہے۔

علاوہ ازیں جگر کے پچیدہ امراض میں بھی لوکاٹ کے پتے مفیداثرات رکھتے ہیں۔


احتیاط:۔

لوکاٹ کی بعض اقسام اور خام حالت میں لوکاٹ ترش ہوتا ہے جو گلے میں خراش اور کھانسی کا باعث بن سکتا ہے جس سے اجتناب ضروری ہے۔
آخر میںشربت لوکاٹ کی ایک ریسپی نذر قارئین ہے۔

لوکاٹ کی ریسپی


شر بت لو کاٹ
اشیائ:
لوکاٹ آدھا کلو( رس نکال لیں)
چینی ایک کلو
پانی ایک بڑا گلاس
ترکیب:
لوکاٹ کا رس پانی سمیت چینی شامل کر کے آگ پرخوب اچھی طرح پکائیں قوام گاڑھا ہو جائے تو اتار کر ٹھنڈا کر لیں اور بوتلوں میں بھر لیں ۔

تین یا چاربڑے چمچ شر بت ایک گلاس پانی میں حل کر کے پئیں۔

یہ نہایت ہی عمدہ اور مفید شر بت ہے۔ دماغ اور دل کو بے حد تقویت دیتا ہے۔

خون کے جوش کو کم کر تا ہے موسم گرما کی بیشتر امراض میں فائدہ مند ہے۔

کھٹی ڈکاریں اور منہ میں پانی آنے کو روکتا ہے متلی قے وغیرہ میں فوری اثر کرتا ہے۔
تحقیق و تحریر۔۔۔ قاضی ایم اے خالد۔۔

About the author: Shah Mahar

No Gain Without Pain
I am a Muslim and Love Muhammad

Comments

No comments yet