ضلع میں بغیر لائسنس کماد کی خرید و فروخت پر پابندی عائد

ڈپٹی کمشنر نعمان یوسف کی زیر صدارت کماد کرشنگ سیزن2021/22کے انتظامات کا جائزہ لینے کے لئے اجلاس، ضلع کی پانچوں شوگر ملز میں کرشنگ شروع، ضلعی انتظامیہ سخت مانیٹرنگ کو یقینی بنائے گی۔ضلع میں بغیر لائسنس کماد کی خرید و فروخت پر پابندی عائد ہو گی،

شوگز ملز انتظامیہ کماد کی خرید اور پروڈیکشن کا مکمل ریکارڈ رکھیں گی، تمام شوگر ملز کاشتکاروں کو سی پی آرز دینے کی مجاز ہوں گی جس میں کماد کی قیمت خرید اور وزن درج ہو گا۔

ڈپٹی کمشنر کی زیر صدارت اجلاس میں اہم فیصلے کئے گئے جس میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر(ریونیو)ڈاکٹر سدرہ سلیم، اسسٹنٹ کمشنر عظمان چوہدری، ڈسٹرکٹ اٹارنی، ڈی او انٹر پرائزز غازی خان،ڈپٹی ڈائریکٹر زراعت اقرار حسین، ڈی ایس پی سٹی محمد اسلم خان سمیت شوگر ملز کے نمائندگان نے شرکت کی

جبکہ تمام تحصیلوں کے اسسٹنٹ کمشنر ز بذریعہ ویڈیو لنک اجلاس میں شریک تھے۔ڈپٹی کمشنر نعمان یوسف نے کہا کہ حکومت پنجاب کی ہدایت پر کرشنگ سیزن 2021/22کو مکمل شفاف بنایا جائے گا۔

شوگر ملز کی جانب سے کرشنگ کا آغاز کر دیا گیا ہے اور تمام شوگر ملز کاشتکاروں سے کماد حکومت کی جانب سے مقرر کردہ نرخ225روپے فی من کے حساب سے خرید کریں گی۔انہوں نے کہا کہ کسی شوگر ملز کا کماد پر کٹوتی کی اجازت نہیں دی جائے گی جبکہ کاشتکار بھی صاف کماد شوگر ملز کو فراہم کرنے کے پابند ہوں گے

جس کے لئے محکمہ زراعت کا فیلڈ سٹاف کاشتکاروں کو معاونت فراہم کرے گا۔انہوں نے ہدایت کی کہ تمام شوگر ملز کاشتکاروں کو ملز میں کماد پہنچنے پر سی پی آرز دینے کی پابند ہیں جس پر کماد کی قیمت خرید اور وزن درج ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ ضلع بھر میں کماد کی بغیر اجازت خرید پر پابندی عائد ہے صرف کین کمشنر پنجاب کی جانب سے لائسنس کے حامل افراد ہی اپنے مخصوص ایریا سے کماد خریدنے کے مجاز ہیں۔

انہوں نے کہا کہ شوگر کین سیزن کے دوران شوگرملز اور غیر قانونی کنڈوں کے خلاف اسسٹنٹ کمشنرز کی سربراہی میں کین کمشنر پنجاب کی جانب سے خصوصی اختیارات کے حامل افسران مانیٹرنگ کے فرائض سر انجام دیں گے اور تمام افسران شوگر ملز میں کماد کی خرید کا ریکارڈ موقع پر چیک کرنے کے مجاز ہوں گے

انہوں نے شوگرملز انتظامیہ کے نمائندگان کو ہدایت کی کہ وہ کماد خرید اور تمام پروڈیکشن کا ریکارڈ درست رکھیں گے جسے کسی بھی وقت چیک کیا جا سکتا ہے جبکہ ناجائز کٹوتی پر فوری کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

ڈپٹی کمشنر نے ہدایت کی کہ کرشنگ سیزن کے دوران ضلعی و تحصیل سطح پر شکایات سیل 24گھنٹے کام کریں گے جبکہ تمام شوگر ملز کے اندر بھی ضلعی انتظامیہ کے شکایات سیل فعال رہیں گے جہاں پر موجود افسران کاشتکاروں کی جانب سے موصول شکایات کا فوری ازالہ کریں گے۔انہوں نے واضح ہدایت کی کہ تمام مانیٹرنگ افسران خلاف ورزی کی صورت میں فوری مقدمات درج کرائیں گے علاوہ ازیں شوگر ملز انتظامیہ کماد لیکر آنے والے کاشتکاروں کی سہولت کے لئے انتظامات کو بھی یقینی بنائے گی۔

انہوں نے کہا کہ شوگر سیزن کے دوران ٹریفک کے بہاؤ کو برقرا ررکھنے کے لئے ٹریفک پولیس اور موٹر وئے پولیس خدمات سر انجام دے گی جبکہ سیکرٹری آر ٹی اے اوور لوڈنگ کا خاص خیال رکھیں گے جبکہ تمام کاشتکار اپنا کماد رات کے وقت شوگر ملز لیجاتے ہوئے کماد کی ٹرالیوں کے پیچھے ریفلیکٹرز یا چائنہ لائٹس کا استعمال کریں گے تاکہ پیچھے سے آنے والی گاڑیوں کو کماد کی ٹرالی شناخت کرنے میں مشکل پیش نہ آئے۔

اجلاس میں ڈسٹرکٹ اٹارنی سے شوگر کین ایکٹ کے حوالہ سے تفصیلی بریفنگ دی۔

About the author: Shah Mahar

No Gain Without Pain
I am a Muslim and Love Muhammad

Comments

@peepso_user_54(Professor Javed)
nice
16/11/2021 1:31 am
@peepso_user_31(Aisha)
so bad
16/11/2021 8:13 am